Humayun Nama ہمایوں نامہ Book Corner

Humayun Nama ہمایوں نامہ

Rs.700 70000
  • Successful pre-order.Thanks for contacting us!
  • Order within
Book Title
Humayun Nama ہمایوں نامہ
Author
Book Corner
Order your copy of Humayun Nama ہمایوں نامہ from Urdu Book to get discount along with vouchers and chance to win books in Pak book fair.  Author: Gulbadan Begum ISBN No: N/A Book Pages: N/A Language: Urdu Category: History, Mughal Empire, Autobiography  ’’ہمایوں نامہ‘‘بنت بابر بادشاہ کی لخت جگر گلبدن بیگم کی خودنوشت ہے جس کا راست فارسی زبان سے ترجمہ کیا گیا ہے۔ سچ جانیے اس کی حروف خوانی، جملوں کے در و بست اور زبان اُردو کے احترام میں نک سک سنوارتے مجھے گلبدن بیگم اور اُن کے گھرانے سے محبت ہو گئی۔ کیا قدریں تھیں، روایات، رسم و رواج، شرم و حیا کے پیمانے، وضع داری جو وقت برد ہو گیا۔ بھکر کے محاصرہ کے دوران جب شہنشاہ شاہجہاں نے حمیدہ بانو بیگم کا رشتہ مانگا تو اس نے رشتہ قبول کرنے میں کئی ماہ لگا دیے۔ قلعہ کے اندر پہلی بار جانے پر تو وہ کورنش بجا لائی۔ بعد میں گھر کی معزز خواتین، معتبر مرد حضرات کے اصرار پر ایک بار بھی شاہ جہاں کے سامنے نہ آئی۔ ادب اور قرینے کے ساتھ اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔ بالآخر رشتۂ ازدواج میں منسلک ہو گئی۔ شاہجہاں کے بھائیوں میں مرزا کامران سب سے سفاک شقی القلب اور سنگ دل انسان تھا۔ جو ساری عمر شاہ جہاں کے ساتھ برسرپیکار رہا۔ یہ آپ بیتی ہے، کتھا ہے، کہانی ہے۔ رواں ہے آساں ہے۔ مطالعہ کیجیے ،مغلیہ عہد کا دور شاہ جہانی آپ کے سامنے متشکل ہو جائے گا۔ آغاز میں دی گئی نادر و نایاب تصاویر نے کتاب کو مزید معتبر بنا دیا ہے جبکہ اختتام میں تاریخی واقعات نامکمل ہونے کے باعث پروفیسر سیّد ابن حسن شارق صاحب کا ضمیمہ اس کتاب کی اہمیت کو دوچند کرتا ہے۔ ادارہ بک کارنر جہلم، اُردو ادب اور تاریخ کی کتابوں کی اشاعت کا ایک مستند ادارہ ہے۔ یہ اس کتاب کی خوش بختی ہے کہ ادارہ نے اسے اشاعت کے لیے چُنا۔محمد حامد سراج Your one-stop Urdu Book store www.urdubook.com  

Order your copy of Humayun Nama ہمایوں نامہ from Urdu Book to get discount along with vouchers and chance to win books in Pak book fair. 

Author: Gulbadan Begum 
ISBN No: N/A 
Book Pages: N/A 
Language: Urdu 
Category: History, Mughal Empire, Autobiography 

’’ہمایوں نامہ‘‘بنت بابر بادشاہ کی لخت جگر گلبدن بیگم کی خودنوشت ہے جس کا راست فارسی زبان سے ترجمہ کیا گیا ہے۔ سچ جانیے اس کی حروف خوانی، جملوں کے در و بست اور زبان اُردو کے احترام میں نک سک سنوارتے مجھے گلبدن بیگم اور اُن کے گھرانے سے محبت ہو گئی۔ کیا قدریں تھیں، روایات، رسم و رواج، شرم و حیا کے پیمانے، وضع داری جو وقت برد ہو گیا۔ بھکر کے محاصرہ کے دوران جب شہنشاہ شاہجہاں نے حمیدہ بانو بیگم کا رشتہ مانگا تو اس نے رشتہ قبول کرنے میں کئی ماہ لگا دیے۔ قلعہ کے اندر پہلی بار جانے پر تو وہ کورنش بجا لائی۔ بعد میں گھر کی معزز خواتین، معتبر مرد حضرات کے اصرار پر ایک بار بھی شاہ جہاں کے سامنے نہ آئی۔ ادب اور قرینے کے ساتھ اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔ بالآخر رشتۂ ازدواج میں منسلک ہو گئی۔ شاہجہاں کے بھائیوں میں مرزا کامران سب سے سفاک شقی القلب اور سنگ دل انسان تھا۔ جو ساری عمر شاہ جہاں کے ساتھ برسرپیکار رہا۔ یہ آپ بیتی ہے، کتھا ہے، کہانی ہے۔ رواں ہے آساں ہے۔ مطالعہ کیجیے ،مغلیہ عہد کا دور شاہ جہانی آپ کے سامنے متشکل ہو جائے گا۔ آغاز میں دی گئی نادر و نایاب تصاویر نے کتاب کو مزید معتبر بنا دیا ہے جبکہ اختتام میں تاریخی واقعات نامکمل ہونے کے باعث پروفیسر سیّد ابن حسن شارق صاحب کا ضمیمہ اس کتاب کی اہمیت کو دوچند کرتا ہے۔ ادارہ بک کارنر جہلم، اُردو ادب اور تاریخ کی کتابوں کی اشاعت کا ایک مستند ادارہ ہے۔ یہ اس کتاب کی خوش بختی ہے کہ ادارہ نے اسے اشاعت کے لیے چُنا۔

محمد حامد سراج

Your one-stop Urdu Book store www.urdubook.com  

Order your copy of Humayun Nama ہمایوں نامہ from Urdu Book to get discount along with vouchers and chance to win books in Pak book fair. 

Author: Gulbadan Begum 
ISBN No: N/A 
Book Pages: N/A 
Language: Urdu 
Category: History, Mughal Empire, Autobiography 

’’ہمایوں نامہ‘‘بنت بابر بادشاہ کی لخت جگر گلبدن بیگم کی خودنوشت ہے جس کا راست فارسی زبان سے ترجمہ کیا گیا ہے۔ سچ جانیے اس کی حروف خوانی، جملوں کے در و بست اور زبان اُردو کے احترام میں نک سک سنوارتے مجھے گلبدن بیگم اور اُن کے گھرانے سے محبت ہو گئی۔ کیا قدریں تھیں، روایات، رسم و رواج، شرم و حیا کے پیمانے، وضع داری جو وقت برد ہو گیا۔ بھکر کے محاصرہ کے دوران جب شہنشاہ شاہجہاں نے حمیدہ بانو بیگم کا رشتہ مانگا تو اس نے رشتہ قبول کرنے میں کئی ماہ لگا دیے۔ قلعہ کے اندر پہلی بار جانے پر تو وہ کورنش بجا لائی۔ بعد میں گھر کی معزز خواتین، معتبر مرد حضرات کے اصرار پر ایک بار بھی شاہ جہاں کے سامنے نہ آئی۔ ادب اور قرینے کے ساتھ اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔ بالآخر رشتۂ ازدواج میں منسلک ہو گئی۔ شاہجہاں کے بھائیوں میں مرزا کامران سب سے سفاک شقی القلب اور سنگ دل انسان تھا۔ جو ساری عمر شاہ جہاں کے ساتھ برسرپیکار رہا۔ یہ آپ بیتی ہے، کتھا ہے، کہانی ہے۔ رواں ہے آساں ہے۔ مطالعہ کیجیے ،مغلیہ عہد کا دور شاہ جہانی آپ کے سامنے متشکل ہو جائے گا۔ آغاز میں دی گئی نادر و نایاب تصاویر نے کتاب کو مزید معتبر بنا دیا ہے جبکہ اختتام میں تاریخی واقعات نامکمل ہونے کے باعث پروفیسر سیّد ابن حسن شارق صاحب کا ضمیمہ اس کتاب کی اہمیت کو دوچند کرتا ہے۔ ادارہ بک کارنر جہلم، اُردو ادب اور تاریخ کی کتابوں کی اشاعت کا ایک مستند ادارہ ہے۔ یہ اس کتاب کی خوش بختی ہے کہ ادارہ نے اسے اشاعت کے لیے چُنا۔

محمد حامد سراج

Your one-stop Urdu Book store www.urdubook.com